Divine Dreams

Pakistan Army Shadeed Muskilat Mein Aur Army Chief Pareshan

May, 26, 2018
میں اِس خواب میں سوچ رہا ہوتا ہوں کہ پاک فوج کی وہ کون سی خوراک ہے جس میں دشمن وائرس ملا کر انھیں نقصان پہنچا سکتے ہیں، تو اچانک کوئی آواز آتی ہے کہ یہ خوراک ڈالر اور ایندھن ہے، اور اِن کے ختم ہو جانے پر پاک فوج مفلوج ہو جائے گی اور نقل و حرکت نہیں کر پائے گی۔ میں کہتا ہوں کہ ایندھن کو تو ڈالر سے خریدا جاتا ہے اور جب ڈالر ہی نہیں ہوں گے تو ایندھن بھی نہیں آئے گا۔
پھر میں دیکھتا ہوں کہ پاکستان کے حالات کافی خراب ہو چکے ہوتے ہیں۔ پاکستان نے قرضوں کی قسط ادا کرنی ہوتی ہے جو کہ پاکستان کے پاس نہیں ہوتی۔ اگر پاکستان قرضے کی قسط دیتا ہے تو پھر ڈالر کے ذخائر نہیں بچتے۔ ایک یا دو آرمی افسران یہ مشورہ دیتے ہیں کہ ہم بیرون ملک پاکستانیوں سے کہیں گے کہ ڈالر بھیجیں تا کہ ہم اپنے لیے ایندھن خرید سکیں۔ یہ دیکھ کر میں کہتا ہوں کہ آخر لوگ کب تک ڈالر بھیجیں گے، اُن کی اپنی بھی ضرورتیں ہیں،آخر آرمی ایسے منصوبے کیوں بنا رہی ہے؟ پھرجب قرضوں کی قسط ادا کر دی جاتی ہے تو ڈالر کے ذخائر نہ ہونے کے برابر رہ جاتے ہیں۔ پھر میں دیکھتا ہوں کہ آرمی چیف ملکی اخراجات کم کرنے کے لیے ہر طرح کی پابندیاں لگا دیتے ہیں، تا کہ جتنا ممکن ہو بچت کی جا سکے، یہاں تک کہ ٹی وی چینلز پر بھی سادگی کی ترغیب دینے کی ہدایات دی جاتی ہے اور تمام اضافی سرگرمیوں یعنی کھیل وغیرہ کا انعقاد بھی رک جاتا ہے۔
پھر آرمی افسران اعلانیہ اس بات کا اظہار کرتے ہیں کہ حالات بہت خراب ل کا گھر ہوتا ہے۔ میں وہاں پہ اُس افسر کا انتظار کر رہا ہوتا ہوں تاکہ میں اُس کو اپنے خوابوں کے بارے میں بتاؤں۔ میں تھوڑی دیر اندرانتظار کرنے کے بعد باہر کسی کام سے جاتا ہوں۔ باہر کافی پہرہ ہوتا ہے اور سڑک کے دونوں اطراف سے حصار لگا کر گھر کو محفوظ کیا گیا ہوتا ہے۔ اچانک دو بڑی گاڑیاں آتی ہیں اور حصارکے دروازے کھلتے ہیں اور وہ گھر کے اندر داخل ہوجاتی ہیں۔ میں بھی جلدی سے اندرواپس جاتا ہوں تاکہ اُس افسر تک رسائی حاصل کروں، قبل اِس کے کہ وہ کسی کام میں مصروف ہو جائیں۔ جب میں اندر جاتا ہوں تو دیکھتا ہوں کہ وہ پاکستان کے آرمی چیف ہوتے ہیں اور میں سمجھ رہا تھا کہ یہ کوئی اور سینیئر افسر ہوں گے۔ تب مجھے سمجھ آتی ہے کہ اتنی زیادہ حصار بندی کیوں کی گئی اور اتنی زیادہ سکیورٹی کیوں ہے۔ پھر میں سوچتا ہوں کہ شاید آرمی چیف کی جان کو خطرہ ہے اسی لیے اتنی زیادہ سکیورٹی کا انتظام کیا گیا ہے۔عین اُس وقت مجھے اپنا وہ خواب یاد آتا ہے جب میں نے دیکھا تھا کہ آرمی چیف کی جان کو خطرہ ہوتا ہے۔میں سوچتا ہوں کہ کہیں یہ وہی وقت تو نہیں؟
خیر میں جلدی سے اندر جاتا ہوں اور آرمی چیف کو ڈھونڈتا ہوں۔ آرمی چیف مجھے شاید ٹی وی لاؤنج میں مل جاتے ہیں۔ میں اُن کو سلام کرتا ہوں اور کہتا ہوں کہ میں نے آپ سے بہت ضروری بات کرنی ہے۔ وہ مجھے وہاں سے ڈرائنگ روم میں لے جاتے ہیں اور پھر میں اُن کو اپنے خوابوں کے بارے میں بتانا شروع کرتا ہوں۔ آرمی چیف میری بات تسلّی سے سنتے ہیں۔ میں اُن کو غزوہ ہند کے متعلق بھی بتاتا ہوں اور یہ سب کہ حالات کیسے خراب ہوں گے، تیسری جنگ عظیم کیسے شروع ہو گی۔ پاکستان کی کیا حکمت عملی ہونی چاہیے اور مسلمانوں کو پہلی فتح غزوہ ہند میں ملے گی اور اِس کے لیے پاکستان کو کیسےمنصوبہ بندی کرنی چاہیئے۔آرمی چیف میرے خواب سن کر کہتے ہیں کہ قاسم! میری بات سنیں، یہ سب خواب ہیں، اِن کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں۔ ہم پاکستان کے
میں اِس خواب میں سوچ رہا ہوتا ہوں کہ پاک فوج کی وہ کون سی خوراک ہے جس میں دشمن وائرس ملا کر انھیں نقصان پہنچا سکتے ہیں، تو اچانک کوئی آواز آتی ہے کہ یہ خوراک ڈالر اور ایندھن ہے، اور اِن کے ختم ہو جانے پر پاک فوج مفلوج ہو جائے گی اور نقل و حرکت نہیں کر پائے گی۔ میں کہتا ہوں کہ ایندھن کو تو ڈالر سے خریدا جاتا ہے اور جب ڈالر ہی نہیں ہوں گے تو ایندھن بھی نہیں آئے گا۔
پھر میں دیکھتا ہوں کہ پاکستان کے حالات کافی خراب ہو چکے ہوتے ہیں۔ پاکستان نے قرضوں کی قسط ادا کرنی ہوتی ہے جو کہ پاکستان کے پاس نہیں ہوتی۔ اگر پاکستان قرضے کی قسط دیتا ہے تو پھر ڈالر کے ذخائر نہیں بچتے۔ ایک یا دو آرمی افسران یہ مشورہ دیتے ہیں کہ ہم بیرون ملک پاکستانیوں سے کہیں گے کہ ڈالر بھیجیں تا کہ ہم اپنے لیے ایندھن خرید سکیں۔ یہ دیکھ کر میں کہتا ہوں کہ آخر لوگ کب تک ڈالر بھیجیں گے، اُن کی اپنی بھی ضرورتیں ہیں،آخر آرمی ایسے منصوبے کیوں بنا رہی ہے؟ پھرجب قرضوں کی قسط ادا کر دی جاتی ہے تو ڈالر کے ذخائر نہ ہونے کے برابر رہ جاتے ہیں۔ پھر میں دیکھتا ہوں کہ آرمی چیف ملکی اخراجات کم کرنے کے لیے ہر طرح کی پابندیاں لگا دیتے ہیں، تا کہ جتنا ممکن ہو بچت کی جا سکے، یہاں تک کہ ٹی وی چینلز پر بھی سادگی کی ترغیب دینے کی ہدایات دی جاتی ہے اور تمام اضافی سرگرمیوں یعنی کھیل وغیرہ کا انعقاد بھی رک جاتا ہے۔
پھر آرمی افسران اعلانیہ اس بات کا اظہار کرتے ہیں کہ حالات بہت خراب ل کا گھر ہوتا ہے۔ میں وہاں پہ اُس افسر کا انتظار کر رہا ہوتا ہوں تاکہ میں اُس کو اپنے خوابوں کے بارے میں بتاؤں۔ میں تھوڑی دیر اندرانتظار کرنے کے بعد باہر کسی کام سے جاتا ہوں۔ باہر کافی پہرہ ہوتا ہے اور سڑک کے دونوں اطراف سے حصار لگا کر گھر کو محفوظ کیا گیا ہوتا ہے۔ اچانک دو بڑی گاڑیاں آتی ہیں اور حصارکے دروازے کھلتے ہیں اور وہ گھر کے اندر داخل ہوجاتی ہیں۔ میں بھی جلدی سے اندرواپس جاتا ہوں تاکہ اُس افسر تک رسائی حاصل کروں، قبل اِس کے کہ وہ کسی کام میں مصروف ہو جائیں۔ جب میں اندر جاتا ہوں تو دیکھتا ہوں کہ وہ پاکستان کے آرمی چیف ہوتے ہیں اور میں سمجھ رہا تھا کہ یہ کوئی اور سینیئر افسر ہوں گے۔ تب مجھے سمجھ آتی ہے کہ اتنی زیادہ حصار بندی کیوں کی گئی اور اتنی زیادہ سکیورٹی کیوں ہے۔ پھر میں سوچتا ہوں کہ شاید آرمی چیف کی جان کو خطرہ ہے اسی لیے اتنی زیادہ سکیورٹی کا انتظام کیا گیا ہے۔عین اُس وقت مجھے اپنا وہ خواب یاد آتا ہے جب میں نے دیکھا تھا کہ آرمی چیف کی جان کو خطرہ ہوتا ہے۔میں سوچتا ہوں کہ کہیں یہ وہی وقت تو نہیں؟
خیر میں جلدی سے اندر جاتا ہوں اور آرمی چیف کو ڈھونڈتا ہوں۔ آرمی چیف مجھے شاید ٹی وی لاؤنج میں مل جاتے ہیں۔ میں اُن کو سلام کرتا ہوں اور کہتا ہوں کہ میں نے آپ سے بہت ضروری بات کرنی ہے۔ وہ مجھے وہاں سے ڈرائنگ روم میں لے جاتے ہیں اور پھر میں اُن کو اپنے خوابوں کے بارے میں بتانا شروع کرتا ہوں۔ آرمی چیف میری بات تسلّی سے سنتے ہیں۔ میں اُن کو غزوہ ہند کے متعلق بھی بتاتا ہوں اور یہ سب کہ حالات کیسے خراب ہوں گے، تیسری جنگ عظیم کیسے شروع ہو گی۔ پاکستان کی کیا حکمت عملی ہونی چاہیے اور مسلمانوں کو پہلی فتح غزوہ ہند میں ملے گی اور اِس کے لیے پاکستان کو کیسےمنصوبہ بندی کرنی چاہیئے۔آرمی چیف میرے خواب سن کر کہتے ہیں کہ قاسم! میری بات سنیں، یہ سب خواب ہیں، اِن کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں۔ ہم پاکستان کے دفاع کے لیے پوری منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔ ابھی تھوڑا مشکل وقت ہے، مگر ہم سب سنبھال دفاع کے لیے پوری منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔ ابھی تھوڑا مشکل وقت ہے، مگر ہم سب سنبھال لیں گے۔ اوریہ خواب وہیں پہ ختم ہو جاتا ہے۔

You may also like

کشمیر پہ پاکستان اور بھارت کی آخری جنگ (غزوہ ہند) جس میں ہندوستان دنیا سے مٹ جائے گا
غزوہ ہند تیسری جنگ عظیم کا حصہ ہو گی۔ ہندوستان اپنے اتحادیوں سے ملکر پاکستان پر بہت بڑی جنگ مسلط کرے گا اور اس آخری جنگ میں ہندوستان مکمل طور پر تباہ ہو جائے گا۔ اللہ کالے رنگ کے جنگی جہازوں سے پاکستان کی مدد کرے گا۔ تفصیلات کے لئے ویڈیو دیکھیں۔
غزوہ ہند میں پاکستان کا کتنا نقصان ہو گا؟ کیا بھارت تباہ ہو جائے گا؟
غزوہ ہند میں پاکستان کا کتنا نقصان ہو گا؟ کیا بھارت تباہ ہو جائے گا ؟ کیا غزوہ ہند کے بعد پاکستان امریکہ اور روس سے بھی جنگ کرے گا؟ تفصیلات کے لئے ویڈیو دیکھیں۔
Imran Khan K Liye Wake Up Call|Urgent Message in Muhammad Qasim Dreams
Imran Abbasi ka Muhammad Qasim k behalf pe Prime Minister Imran Khan k liye aik bohot hi urgent message. Imran Khan sahib ap Muhammad Qasim k khwabo pe jald az jald twajjoh den taa k mustaqbil mei kisi baray nuqsan se bacha ja sakay. PM Imran [...]
Pakistan aur India ki jang kese hogi – After Khashmir issue
غزوہ ہند تیسری جنگ عظیم کا حصہ ہو گی۔ ہندوستان اپنے اتحادیوں سے ملکر پاکستان پر بہت بڑی جنگ مسلط کرے گا اور اس آخری جنگ میں ہندوستان مکمل طور پر تباہ ہو جائے گا۔ اللہ کالے رنگ کے جنگی جہازوں سے پاکستان کی مدد کرے گا۔ تفصیلات کے لئے ویڈیو دیکھیں۔
1237

Page 1 of 7

Leave a Reply